ہنساتا تھا مجھ کو،

 

ہنساتا تھا مجھ کو،
تو پھر رُلا بھی دیتا تھا
کر کے وہ مجھے سے اکثر وعدے،
بھلا بھی دیتا تھا
بے وفا تھا بہت مگر دل کو اچھا لگتا تھا
کبھی کبھی باتیں محبت کی،
سُنا بھی دیتا تھا
تھام لیتا تھا ہاتھ میرا کبھی یونہی خُود
کبھی ہاتھ اپنا میرے ہاتھ سے 
چُھڑا بھی لیتا تھا
کبھی بے وقت چلا آتا تھا ملنے کو
کبھی قیمتی پل محبت کے 
گنوا بھی دیتا تھا
عجب دھوپ چھاؤں سا مزاج تھا اس کا ساغر
معتبر بھی کرتا تھا،
نظروں سے گرا بھی دیتا تھا

397321_10151169694913291_908027263_n

Posted on December 26, 2013, in Sagar Siddiqui Poetry Collection, Urdu Poems and tagged , , , . Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s