مجھے اچھا سا لگتا ہے

 

مجھے اچھا سا لگتا ہے
تمہارے سنگ سنگ چلنا
وفا کی آگ میں جلنا
تمہیں ناراض کر دینا
تمہیں خود ہی منا لینا
تمہاری بے رخی پر بھی
تمہارے ناز اٹھا لینا
بہت گہرے خیالوں میں
جوابوں میں، سوالوں میں
محبت کے حوالوں میں
تمہارا نام آجانا
مجھے اچھا سا لگتا ہے
تمہاری آرزو کرنا
خود اپنے دل کی دھڑکن سے
تماری گفتگو کرنا
بہت اچھا سا لگتا سے
تمہی کو دیکھتے رہنا
تمہی کو سوچتے رہنا
مجھے اچھا سا لگتا ہے

72911_10151414118608291_72124727_n

Posted on December 23, 2013, in Urdu Poems and tagged , , , . Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s