تمھیں معلوم ہے جاناں

 

تمھیں معلوم ہے جاناں
ابھی کچھ دیر پہلے ہی
اداس شام افق کی دہلیز پہ بیٹھے
قربتوں کی آرزو
مہکتی ، مسکراتی ، ان کہی سی گفتگو
سرمئی سے آنچل کی آبرو
اپنی پرنم و پرخواب آنکھوں میں سجائے 
منتطر تھی
ابھی کچھ دیر پہلے ہی
بھٹکتی سی خواہشیں
پرامید سی آہٹیں
سسکتی آہ بھرتی دم توڑتی کاوشیں
بےرنگ مسکراہٹیں
اپنے دل بےقرار میں لیے
بڑی شدت سے تمھیں تکتی رہی
کہ اب وہ آئے گا
پکارے گا
سجائے گا
شبنمی ہونٹوں پہ میرا نام
مگر جاناں…
مجھے شک ہے کہ بہت دیر ہو چکی ہے
دن بھر جلتے جلتے
سورج ڈوب چکا ہے
شام بھی شاید ڈوب چکی ہے

549340_10151414124188291_506751550_n

Posted on December 23, 2013, in Urdu Poems and tagged , , , . Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s